ایران نے بھارت کو ایک اور بڑے منصوبے سے بھی فارغ کردیا | INDUS PRESS

current affairs pakistan, current affairs in urdu, world news in urdu, current affairs 2020 in urdu, current affairs 2019 in urdu, current affairs urdu, current affairs, current affairs news, international current affairs, monthly current affairs, today current affairs, recent current affairs, latest current affairs, top 10 current affairs, 10 current affairs, new current affairs, world current affairs, current affairs in english, latest current affairs 2019, current affair 2018, current affairs 2019, CURRUNT AFFAIRS 2020, current affairs of 2018, current affairs 2019 in english, current affairs of 2019, general knowledge current affairs, duniya ki khabren, duniya bhar ki khabren, duniya ki khabar, current affairs pakistan pdf,

INDUS ONLINE

ایران نے چابہار ریلوے لائن منصوبے کے بعد بھارت کو گیس فیلڈ کے بڑے منصوبے سے بھی نکال دیا ہے۔
حالیہ دنوں میں بھارت کو عالمی سطح پر پے در پے ہزیمت کا سامنا کرنا پڑ رہا ہے۔
لداخ میں چین کے ہاتھوں درگت بننے کے بعد ایران نے گذشتہ دنوں چابہار ریلوے لائن پراجیکٹ سے بھارت کو نکال کر اپنے طور پر ریل لائن کی تعمیر کا فیصلہ کیا تھا
4 سال قبل ہونے والےمعاہدے کے تحت افغانستان کی سرحد کے ساتھ ایرانی بندرگاہ چابہار سے زاہدان تک ریلوے لائن کی تعمیر ہونی تھی تاہم بھارت کی جانب سے ٹال مٹول اور تاخیر کے بعد ایران نے منصوبے سے بھارت کو الگ کردیا۔

اب بھارت کو تجارتی اور سفارتی لحاظ سے ایک اور ہزیمت کا سامنا ہے کیوں کہ ایران نے بھارت کو فرزاد گیس فیلڈ منصوبے سے بھی الگ کردیا ہے۔
گذشتہ روز بھارتی وزارت خارجہ نے ایک بیان میں کہا تھا کہ ایران نے خلیج فارس کے علاقے میں فرزاد-بی گیس فیلڈ کو اپنے طور پر تیار کرنے کا فیصلہ کیا ہے اور اس بات کا امکان ہے کہ اس منصوبے میں بھارت کو بعد میں کسی اور مرحلے میں شامل کیا جائے۔
رپورٹ کے مطابق خلیج فارس میں واقع اس فیلڈ میں اندازے کے تحت 21.7 کھرب مکعب فٹ قدرتی گیس کے ذخائر ہوں گے،جسے 2008ء میں تین بھارتی کمپنیوں کے کنسورشیم نے دریافت کیا تھا تاہم ایران پر امریکی پابندیوں کے باعث منصوبے پر کام تاخیر کا شکار تھا۔
'ایرانی پالیسی میں تبدیلی سے دو طرفہ تعاون متاثر ہواہے'
بھارتی وزارت خارجہ نے اپنے بیان میں کہا ہے کہ ایران کی جانب سے پالیسی میں تبدیلی سے دو طرفہ تعاون متاثر ہوا ہے۔
ترک خبر رساں ادارے کے مطابق بھارت کے ہاتھ سے ان منصوبوں کا نکلنا دونوں ممالک کے تعلقات کے لیے بڑا دھچکا ہے کیونکہ فرزاد-بی گیس فیلڈ اور چابہار بندرگاہ کے منصوبے دونوں ممالک کے درمیان تعلقات کے لیے اہم کامیابی تصور کیے جاتے تھے۔

خیال رہے کہ چین نے حالیہ دنوں میں ایران کے ساتھ 400 ارب ڈالر کی 25 سالہ تزویراتی (اسٹریٹجک) شراکت داری کا معاہدہ کیا ہے، اس لیے اس بات کا امکان ظاہر کیا جارہا ہے کہ بھارت کے بعد فرزاد گیس فیلڈ اور چابہار کا منصوبہ ممکنہ طور پر چین کو مل سکتا ہے۔



current affairs pakistan, current affairs in urdu, world news in urdu, current affairs 2020 in urdu, current affairs 2019 in urdu, current affairs urdu, current affairs, current affairs news, international current affairs, monthly current affairs, today current affairs, recent current affairs, latest current affairs, top 10 current affairs, 10 current affairs, new current affairs, world current affairs, current affairs in english, latest current affairs 2019, current affair 2018, current affairs 2019, CURRUNT AFFAIRS 2020, current affairs of 2018, current affairs 2019 in english, current affairs of 2019, general knowledge current affairs, duniya ki khabren, duniya bhar ki khabren, duniya ki khabar, current affairs pakistan pdf,

PAKISTAN NEWS

[Latest-Pakistani-news-in-Urdu][bleft]

Mobile Price

[Mobile-Price-in-Pakistan][bleft]

Interesting Facts

[Interesting-Facts-in-Urdu][bleft]

Interesting Information

[Interesting-Information-in-Urdu][bleft]

Interesting Stories

[Interesting-Stories-in-Urdu][bleft]

HEALTH

[Totkay-in-Urdu][bleft]

TECH

[Tech-News-in-Urdu][bleft]

WORLD

[World-News-in-Urdu][bleft]

CRICKET NEWS

[Today-Cricket-News-in-Urdu][bleft]

Pakistani Showbiz

[Latest-Showbiz-News-in-Urdu][bleft]

Bollywood News

[Bollywood-News-in-Urdu-Today][bleft]

BUSINESS

[Business-News-in-Urdu][Bleft]